spot_img

ذات صلة

جمع

ایران اپنے جوہری وعدوں پر عمل درآمد کرے: سعودی عرب

سعودی وزیر خارجہ فیصل بن فرحان نے اقوام متحدہ...

عمران خان کے بیانیہ کی بنیادی غلطی۔۔۔!

۔1تحریک ط۔ا۔ل۔ب۔ا۔ن اور ا۔ل۔ق۔ا۔ع۔د۔ہ نے پاکستانی ریاست کے خلاف...

‘نمبر دار کانیلا’ پھر کھل گیا۔۔۔!

ہندوستان کا بٹوارہ جدید عالمی تاریخ کے بڑے واقعات...

مفتاح اسماعیل کے نام۔۔۔!

مہنگائی کا طوفان ہے اور سب اس کی لپیٹ...

عمران مخالف بیانیہ بے اثر کیوں۔۔۔؟

میں سماجی نفسیات اور منطق واستدلال کے اصولوں سے...

سعودی وزیر خارجہ کی عمران خان سے ملاقات

وزیراعظم عمران خان سے سعودی عرب کے وزیر خارجہ فیصل بن فرحان السعود نے وزیراعظم ہاؤس میں ملاقات کی جہاں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اسلامی تعاون تنظیم کے کردار کو فعال کرنے سمیت باہمی تعلقات اور علاقائی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعظم آفس سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کے وزیر خارجہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ اپنے تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے جو کہ قریبی دوستانہ و تاریخی تعلقات اور عوام کی سطح پر تعاون کی بنیاد پر مبنی ہیں۔

انہوں نے فروری 2019 میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس سے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں باہمی تعاون اہمیت اجاگر ہوتی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے دونون ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے معاشی تعلقات اور مختلف شعبوں بالخصوص پیٹرو کیمیکلز، معدنیات اور قابل تجدید توانائی میں سعودی عرب کی سرمایہ کاری کے عزم کو سراہا۔

وزیراعظم نے امید ظاہر کی کہ سعودی عرب کی ٹیم حالیہ دورہ سعودی عرب کے دوران ولی عہد سے ملاقات کے دوران طے ہونے والے شیڈول کے مطابق سیاحتی شعبے میں بہتری میں تعاون کے لیے جلدہی پاکستان کا دورہ کرے گی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ملاقات کے دوران وزیراعظم عمران خان نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی المیہ اور انسانی حقوق کی پامالیوں کو تفصیل سے اجاگر کیا۔

انہوں نے بھارت کے امتیازی شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور نیشنل رجسٹر آف سٹیزنز (این آر سی) کو بھی اجاگر کیا جس کے تحت بھارتی حکومت اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو منظم انداز میں نشانہ بنا رہی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ بھارت کی جانب سے کنٹرول لائن (ایل او سی) پر جارحانہ اقدامات سے کشیدگی میں مزید اضافہ ہو رہا ہے اور علاقائی امن و استحکام داؤ پر لگ گیا ہے۔

انہوں نے زور دیا کہ عالمی برادری کو کشمیریوں کی آزادیوں اور حقوق کے تحفظ، مسئلہ جموں و کشمیر کے حل کے لیے سہولت فراہم کرنے کے لیے کردار ادا کریں اور بھارت میں اقلیتوں کے تحفظ کے لیے اقداما کیے جائیں۔

وزیراعظم ہاؤس سے جاری بیان کے مطابق سعودی عرب کے وزیر خارجہ شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد محمد بن سلمان کی جانب سے پاکستانی عوام اور قیادت کو نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا اور پاکستان کی جانب سے علاقائی امن و استحکام کے لیے اقدامات کو سراہا۔

انہوں نے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان دوستانہ تعلقات کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے سعودی قیادت کی جانب سے دونوں ممالک کے درمیان دوستانہ تعلقات اور کثیر الجہتی تعاون کو مزید مستحکم کرنے کا عزم دہرایا۔

سعودی وزیرخارجہ فیصل بن فرحان السعود نے تجارت، سرمایہ کاری، توانائی اور سیاحت سمیت مختلف شعبوں میں باہمی تعاون میں اضافے کے عزم کا بھی اعادہ کیا۔

انہوں نے پاکستان کو اہم قومی معاملات پر فوری تعاون کا بھی عزم دہرایا جہاں مسئلہ جموں و کشمیر کے حوالے سے اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے کردار کو بڑھانے پر بھی غور کیا گیا۔

سعودی وزیرخارجہ فیصل بن فرحان کا سعودی مملکت کا اہم عہدہ سنبھالنے کے بعد پاکستان کا یہ پہلا دورہ تھا اور اس دورے میں دونوں فریقین نے اعلیٰ سطحی پر رابطے برقرار رکھنے، باہمی امور اور علاقائی مسائل پر قریبی تعاون کو بدستور فروغ دینے کا عزم کیا۔

وزیراعظم عمران خان اور وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کے بعد سعودی وزیرخارجہ کا ایک روزہ دورہ مکمل ہوا اور وہ واپس سعودی روانہ ہوگئے۔

سعودی وزیرخاجہ کا استقبال

قبل ازیں حال ہی میں سعودی عرب کے وزیرخارجہ کا عہدہ سنبھالنے والے شہزادہ فیصل بن فرحان السعود جمعرات کو پاکستان پہنچے تھے، جہاں دفترخارجہ آمد میں ان کے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی نے استقبال کیا تھا۔

رواں برس اکتوبر میں منصب سنبھالنے کے بعد سعودی وزیر کا یہ پاکستان کا پہلا دورہ تھا— فوٹو:نوید صدیقی
رواں برس اکتوبر میں منصب سنبھالنے کے بعد سعودی وزیر کا یہ پاکستان کا پہلا دورہ تھا— فوٹو:نوید صدیقی

ملاقات کے دوران دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ نے دو طرفہ باہمی تعلقات، خطے کی صورتحال اور باہمی دلچسپی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

رواں برس اکتوبر میں منصب سنبھالنے کے بعد سعودی وزیرخارجہ کا یہ پہلا دورہ پاکستان تھا، جس میں دو طرفہ دلچسپی کے امور اور علاقائی معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ملاقات کے دوران دونوں ہم منصبوں نے مقبوضہ کشمیر کے معاملے پر دو طرفہ اجلاس کا انعقاد جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔

بعد ازاں سعودی نے وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات کی اور مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا، اس موقع پر شاہ محمود قریشی بھی موجود تھے۔

spot_imgspot_img