spot_img

ذات صلة

جمع

‘نمبر دار کانیلا’ پھر کھل گیا۔۔۔!

ہندوستان کا بٹوارہ جدید عالمی تاریخ کے بڑے واقعات...

مفتاح اسماعیل کے نام۔۔۔!

مہنگائی کا طوفان ہے اور سب اس کی لپیٹ...

عمران مخالف بیانیہ بے اثر کیوں۔۔۔؟

میں سماجی نفسیات اور منطق واستدلال کے اصولوں سے...

خلیفہ بن زید النہیان اور پاکستان

متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زاید...

ہم کہاں بھٹک گئے!

میں نے جیسے ہی ان تصاویر کو دیکھا مجھے...

پاکستان کرپشن میں ترقی کی راہ پر گامزن ہے، ٹرانپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ جاری

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ 2018ء کی نسبت 2019ء کے دوران پاکستان میں کرپشن بڑھی ہے۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے دنیا کے 180 ممالک میں کرپشن سے متعلق 2019ء کی رپورٹ جاری کر دی، جس میں بتایا ہے کہ پاکستان کرپشن پرسیپشن انڈیکس میں پچھلے سال کی نسبت ایک نمبر کم حاصل کر سکا۔

رپورٹ کے مطابق 2018ء میں پاکستان نے کرپشن کےخلاف اقدامات میں 33 نمبر حاصل کیے تھے، لیکن 2019ء میں پاکستان کا اسکور ایک نمبر کی کمی کے بعد 32 رہا۔

32 اسکور حاصل کرنے پر پاکستان کا کرپشن پرسیپشن انڈیکس 3 درجے بڑھ کر 117 سے 120 ویں درجے پر چلا گیا ہے۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کا اپنی رپورٹ میں کہنا ہے کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی کرپشن پرسیپشن انڈیکس کے 180 رینکس میں پاکستان کا رینک 120 ہے۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی گزشتہ رپورٹس کے مطابق 2010ء سے 2018ء تک پاکستان کرپشن پرسیپشن انڈیکس میں مسلسل بہتری کی جانب بڑھ رہا تھا۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی تازہ رپورٹ کے مطابق 10 سالوں میں یہ پہلی بار ہے کہ کرپشن سے متعلق انڈیکس میں پاکستان آگے بڑھنے کے بجائے پیچھے گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ موجودہ چیئرمین جاوید اقبال کی زیرِ قیادت قوم احتساب بیورو (نیب) کی کارکردگی بہتر رہی، نیب پاکستان نے بدعنوان عناصر سے 153 ارب روپے نکلوائے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 2019ء میں زیادہ تر ممالک کی کرپشن کم کرنے میں کارکردگی بہتر نہیں رہی، 2019ء میں پہلا نمبر حاصل کرنے والے ڈنمارک کا اسکور بھی 1 پوائنٹ کم ہو کر 87 رہا۔

ٹرانسپرینسی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ جی 7 کے ترقی یافتہ ممالک بھی انسدادِ بدعنوانی کی کوششوں میں پھنسے ہوئے ہیں، امریکا، برطانیہ، فرانس اور کینیڈا کا انسدادِ بدعنوانی کا اسکور بھی کم رہا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ امریکا کا اسکور 2، برطانیہ اور فرانس کا 4 اور کینیڈا کا انسدادِ بدعنوانی اسکور 4 درجے کم رہا۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل پاکستان کے چیئرمین سہیل مظفر کا رپورٹ سے متعلق کہنا ہے کہ پاکستان میں کرپشن کے خلاف بڑھتے ہوئے اقدامات کے باوجود کرپشن پرسیپشن انڈیکس میں پاکستان کا اسکور پچھلےسال کے مقابلے میں ایک پوائنٹ کم ہوا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ 2019ء کے انڈیکس میں کئی ترقی یافتہ ممالک نے بھی کم نمبر حاصل کیے ہیں، ان ممالک میں کینیڈا نے 4 نمبر کم حاصل کیے۔

سہیل مظفرکا کہنا ہے کہ پچھلے سال کینیڈا کے 81 نمبر تھے اور اس سال 77 ہیں، فرانس نے 3 نمبر کم حاصل کیے، فرانس کے پچھلے سال نمبر 72 تھے جو اس سال 69 ہیں، اسی طرح برطانیہ نے بھی پچھلے سال کی نسبت 3 پوائنٹس کم حاصل کیے ہیں۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے دنیا بھر میں بڑھتی کرپشن روکنے کے لیے سفارشات بھی تجویز کی ہیں، جن کے مطابق:

  • دنیا بھر میں سیاسی فنانسنگ کو کنٹرول کیا جائے۔
  • سیاست میں بڑے پیسے اور اثر و رسوخ کو قابو کیا جائے۔
  • بجٹ اور عوامی سہولتوں کو ذاتی مقاصد اور مفاد رکھنے والوں کے ہاتھوں میں نہ دیا جائے۔
  • مفادات کے تصادم اور بھرتیوں کے طریقے پر قابو کیا جائے۔
  • دنیا بھر میں کرپشن روکنے کے لیے لابیز کو ریگولیٹ کیا جائے۔
  • الیکٹورل ساکھ مضبوط کی جائے۔
  • غلط تشہیر پر پابندی لگائی جائے۔
  • شہریوں کو بااختیار کریں۔
  • سماجی کارکن، نشاندہی کرنے والوں اور جرنلسٹ کو تحفظ دیں۔
  •  کرپشن روکنے کے لیے چیک اینڈ بیلنس اور اختیارات کو علیحدہ کیا جائے۔
spot_imgspot_img