spot_img

ذات صلة

جمع

ایران اپنے جوہری وعدوں پر عمل درآمد کرے: سعودی عرب

سعودی وزیر خارجہ فیصل بن فرحان نے اقوام متحدہ...

عمران خان کے بیانیہ کی بنیادی غلطی۔۔۔!

۔1تحریک ط۔ا۔ل۔ب۔ا۔ن اور ا۔ل۔ق۔ا۔ع۔د۔ہ نے پاکستانی ریاست کے خلاف...

‘نمبر دار کانیلا’ پھر کھل گیا۔۔۔!

ہندوستان کا بٹوارہ جدید عالمی تاریخ کے بڑے واقعات...

مفتاح اسماعیل کے نام۔۔۔!

مہنگائی کا طوفان ہے اور سب اس کی لپیٹ...

عمران مخالف بیانیہ بے اثر کیوں۔۔۔؟

میں سماجی نفسیات اور منطق واستدلال کے اصولوں سے...

ایران ترکی میں اپنے سیاسی مخالفین کو ختم کرنے کے درپے

ویب ڈیسک

ترکی کے ذرائع ابلاغ نے سکیورٹی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایرانی انٹیلی جنس کے زیر انتظام ایک نئے گروہ کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ یہ گروہ 14 افراد پر مشتمل ہے۔ گروہ نے ترکی میں ایرانی سیاسی مخالفین کے خلاف اغوا کی کارروائیاں انجام دینے کی کوشش کی۔ ان مخالفین میں ایرانی بحریہ کا ایک اہل کار شامل ہے جو فرار ہو کر انقرہ آ گیا تھا۔سکیورٹی ذرائع کے مطابق گرفتار ہونے والوں میں 2 ایرانی شہری اور 12 ترک شہری شامل ہیں جو اس گروپ کے لیے کام کر رہے تھے۔ علاوہ ازیں مقامی ایجنٹ بھی ہیں جن کو مالی رقوم دی گئی تھیں۔ ان ایجنٹوں کو اریانی سیاسی مخالفین کو اغوا کر کے انہیں ترکی کی سرحد کے پار ایران کی اراضی میں پہنچانا تھا۔

اس سے قبل ترکی کے میڈیا نے جمعے کی رات بتایا تھا کہ 9 افراد پر مشتمل ایک ایرانی گروہ کو پکڑ لیا گیا ہے۔ یہ کارروائی ترک انٹیلی جنس اداروں نے کی۔ترکی میں مقامی میڈیا نے آج جمعے کے روز بتایا کہ ترک انٹیلی جنس کی کارروائی میں 8 افراد پر مشتمل ایک گروہ کو پکڑ لیا گیا ہے۔یہ گروہ ترک اسرائیلی (دہری شہریت کے حامل) تاجر یائر گیلر کو ہلاک کرنے کی منصوبہ بندی کر رہا تھا۔ کارروائی کا مقصد ایرانی سائنس دان فخری زادہ کے قتل پر جوابی کارروائی کرنا تھا۔

اس سلسلے میں ترکی کے اخبار “ڈیلی صباح” نے بتایا کہ منصوبے کی ہدف کاروباری شخصیت دفاع اور سکیورٹی میں اپنی سائنسی کامیابیوں کے سبب معروف ہے۔ ایرانی جاسوس نیٹ ورک نے یائر گیلر کی کمپنی کے صدر دفتر اور استنبول میں اس کی رہائش گاہ کی نگرانی کی۔اخبار کے مطابق اسرائیلی انٹیلی جنس (موساد) اور ترک انٹیلی جنس کے بیچ انقرہ میں ایک اجلاس ہوا تا کہ قتل کے منصوبے کو ناکام بنایا جا سکے۔ اجلاس کے بعد مذکورہ ترک اسرائیلی تاجر کو ایک محفوظ گھر منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

spot_imgspot_img