COVID-19

اپریل 16, 2020

دنیا میں کرونا وائرس، مگر ایران میں خامنہ ای وائرس

خامنہ ای وائرس نے امریکا میں جن دوسرے سیاست دانوں کو متاثر کیا ہے،ان میں سینیٹر باب مینیڈیز اور ایوان نمایندگان کے رکن ایلیٹ اینجیل بھی شامل ہیں۔ انھوں نے حال ہی میں ایک بیان جاری کیا ہے اور اس میں ایرانی نظام کے خلاف عاید کردہ پابندیوں کے خاتمے کا مطالبہ کیا ہے۔حتٰی کہ ڈیموکریٹک پارٹی کے متوقع صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے بھی ایران کے خلاف عاید کردہ پابندیوں میں نرمی کا مطالبہ کیا ہے۔یہ اور بات ہے کہ انھیں اس مطالبے پر تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے اور یہ کہا گیا ہے کہ ان کی اپیل میں کوئی وزن نہیں تھا۔
مارچ 31, 2020

کورونا وائرس کا انسداد: عالمی سول سوسائٹی کا امریکی دواساز ادارے کے نام کھلا خط

دنیا بھر کے 150 اداروں اور 12 انفرادی شخصیات (جن میں پاکستان سے بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی کے شعبہ قانون کے سربراہ ڈاکٹر عزیز الرحمن بھی شامل ہیں) نے امریکی دوا ساز ادارے گیلیاڈ کو ایک کھلا خط لکھا جس میں گیلیاڈ کی دوا Remdesivir کی منظوری کی صورت میں آسان، فوری اور محفوظ رسائی کو یقینی بنانے پر زور دیا گیا ہے۔